Tag: Ayan Ali

ایان علی کے بیرون ملک جانے پر پابندی

September 06, 2015
06Sep15_KH ایان علی
Khabrain

راولپنڈی (خصوصی رپورٹ) کرنسی سمگلنگ کیس میں ماڈل ایان علی پر کسٹم عدالت میں فرد جرم تو نہیں لگ سکی تاہم ذرائع کے مطابق ان کے بیرون ملک جانے پر پابندی عائد کرکے نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا۔ معلوم ہوا ہے کہ کسٹمز نے ماڈل کے بیرون ملک فرار کے خدشے کے پیش نظر نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے کی سفارش کر رکھی تھی۔ ایک ذمہ دار افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ماڈل ایان علی کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا ہے۔ ۔ ماڈل ایان علی کے خلاف کسٹم عدالت کے جج رانا آفتاب احمد خان نے پانچ لاکھ چھ ہزار امریکی ڈالر دئی سمگل کرنے کے مقدمہ کی سماعت 15 ستمبر تک ملتوی کردی۔

AYYAN ALI COULDN’T BE INDICTED IN CURRENCY SMUGGLING CASE

September 04, 2015
04Sep15_NH ایان علی01
NewsHub
RAWALPINDI: Model Ayyan Ali could not be indicted in the currency smuggling case today as the challan of the case was incomplete.
“It has not been determined so far, whether the property dealer and the purchaser of property are accused or if they are the witnesses in the case,” he argued.
“Solid evidence is available against the accused about her involvement in money laundering,” the reply added seeking permission, to conduct an investigation against Ayyan.
The court reprimanded the customs authorities for their failure to produce a complete challan and directed them to present a complete challan on the next hearing. The judge also ordered the custom officials to record complete statements of witnesses Owais and Mumtaz and to fulfill the legal requirement with regard to a petition filed in the Lahore High Court in connection with the arrest of the two men. The hearing of the case has been adjourned till September 15.

حساس اداروں کا ایا ن علی کو گر فتار کر نیکا فیصلہ

September 03, 2015
03Sep15_KH ایان علی
Khabrain

لاہور (سیاسی رپورٹر) حساس اداروں نے منی لانڈرنگ میں ملوث ماڈل اداکارہ ایان علی کو گرفتار کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ ان کی گرفتاری آنے والے چند روز میں متوقع ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ماضی میں ایان علی کی گرفتاری اور اس کے بعد ضمانت پر رہائی کے حوالے سے حساس اداروں کو شدید تحفظات ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ ملزمہ سے تفتیش میں پولیس نے حقائق نہیں اگلوائے گئے۔ جبکہ ان اداروں کے پاس اس بات کے ثبوت ہیں کہ ایان علی کے ذریعہ باہر منتقل کئے جانے والے کروڑوں روپے میں سے پیشتر رقم دہشت گردوں تک پہنچتے تھے اور رقم پاکستان میں ددہشت گردی میں استعمال ہوتی تھی، اس سلسلے میں حساس اداروں نے ایان علی کے غیر ملکی دوروں اور ان میں باہر لے جائی جانے والی دولت کے علاوہ دہشت گردوں کی مکمل تفصیلات بھی حاصل کر لی ہیں جن تک یہ رقوم پہنچائی جاتی تھیں، ذرائع کا کہنا ہے کہ آنے والے چند دنوں میں ایان علی کی گرفتاری متوقع ہے اور انہیں گرفتاری کے بعد 90 روز کیلئے رینجرز کے حوالے کیا جائے گا تا کہ ان سے دہشت گردی کے نیٹ ورک کے حوالے سے مزید مکمل معلومات حاصل کی جا سکیں یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ بعض حساس اداروں نے اس سے پہلے بھی حکومتی افراد کو اطلاع دی تھی کہ ایان علی کی گرفتاری لازم ہے، یہ بھی پتہ چلا ہے کہ ضمانت کے باوجود دہشت گردی اور دہشت گردوں کی سہولت کاری کے ملزمہ کو کسی بھی وقت گرفتار کیا جا سکتا ہے اور ضمانت اس کے راستے میں حائل نہیں۔ اور اداروں کو یہ بات کا مکمل حق حاصل ہے کہ وہ پاکستان میں منی لانڈرنگ کے واقعہ کی مرکزی کردار سے ان لوگوں کے حقائق معلوم کر سکیں جو یہ رقوم بھجواتے تھے اور یہ بڑی بڑی رقمیں باہر کن کو ملتی تھیں اور وہ اسے کن مقاصد کیلئے استعمال کرتے تھے۔

ایان علی کیخلاف منی لانڈرنگ کیس کی از سر نو تفتیش کی تیاریاں

(جمعرات 7 مئ 2015)
Ayan Ali, ModelExpressNews_BU

راولپنڈی: کرنسی اسمگلنگ کیس میں گرفتار معروف ماڈل ایان علی کیخلاف مقدمے کی سماعت کل (جمعہ کو) ڈیوٹی جج بینکنگ عدالت صابر سلطان کی عدالت میں ہوگی۔حتمی چالان پیش نہ کیے جانے پر فریقین کے وکلاء میں گرما گرم بحث متوقع ہے۔
تفتیشی ٹیم نے موقع کا نقشہ بھی تیار کر لیا ہے مگر اسے ملزمہ کے وکیل کو نہ دینے کافیصلہ کیا گیا ہے۔ملزمہ کیخلاف کرنسی اسمگلنگ اور منی لانڈرنگ کے دونوں الزامات میں نئے چالان اور از سر نو تفتیش کی تیاریاں کی جارہی ہیں۔آئندہ چند روز میں ماڈل کی ایئرپورٹ آمد سے گرفتاری تک سرگرمیوں کی ملنے والی فوٹیج کے تحت گرفتاریاں بھی متوقع ہیں۔اے ایس ایف کے حکام نے اس روز راول لاؤنج آنیوالے افرادکی لسٹ سے کچھ نام ٹیمپرنگ کرکے حذف کیے ہیں اور وہ ’’افراد‘‘ فوٹیج میں موجود ہیں ۔اس بنیاد پر اے ایس ایف کے ذمے داران کو بھی شامل تفتیش کیا جا رہا ہے۔

بیان ریکارڈ کراکے دبئی جانے والے ہارون اور اویس نے وہاں جا کرتفتیشی ٹیم سے رابطہ ختم کردیا ہے،جس ملزم کووعدہ معاف گواہ بنانے کی کوشش کی جا رہی تھی وہ بھی وعدہ معاف گواہ بننے کی حامی بھر کرغائب ہوگیا ہے۔اس معاملے میں منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج ہوتے ہی مزید افرادکی گرفتاریاں کی جائیں گی۔