Category: کینڈا

کینیڈا کے شام میں داعش مخالف فضائی حملوں کا آغاز

09Apr15_AAکینڈا01
AA_Orig

کینیڈا نے عراق کے بعد شام میں بھی سخت گیر جنگجو گروپ دولت اسلامی(داعش) کے ٹھکانوں پر فضائی حملوں کا آغاز کردیا ہے۔کینیڈین فوج کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق اس کے دو ایف 18 طیاروں نے بدھ کو پہلی مرتبہ شمال مشرقی شہر الرقہ کے نزدیک داعش کے زیر قبضہ شامی فوج کی عمارتوں پر بمباری کی ہے۔ان فضائی حملوں میں امریکا کے چھے لڑاکا جیٹ سمیت دس طیاروں کے گروپ نے حصہ لیا تھا۔لڑاکا طیاروں نے داعش کے اہداف پر گائیڈڈ بم داغے تھے اور اس کے بعد وہ بہ حفاظت اپنی بیس پر اتر گئے ہیں۔کینیڈا اس سے پہلے امریکا کی قیادت میں صرف عراق میں داعش کے ٹھکانوں پر فضائی حملے کررہا تھا۔گذشتہ ماہ کینیڈین پارلیمان نے سادہ اکثریت سے شام میں بھی داعش کے اہداف پر فضائی حملوں کی منظوری دی تھی۔ تاہم حزب اختلاف نے اس قرارداد کی مخالفت کی تھی اور اس کا ارکان کا کہنا تھا کہ کینیڈا کو اس طویل اور پیچیدہ جنگ میں مزید نہیں الجھنا چاہیے۔کینیڈا نے گذشتہ سال نومبر میں امریکا کی قیادت داعش مخالف اتحاد میں شمولیت اختیار کی تھی اور اس نے کرد فورسز کی تربیت کے لیے خصوصی فورسز کے ستر اہلکار بھی شمالی عراق میں بھیجے ہوئے ہیں۔امریکا اور اس کے اتحادی ممالک کے لڑاکا طیاروں اگست 2014ء سے عراق میں داعش کے ٹھکانوں پر بمباری کررہے ہیں لیکن ان کے تباہ کن فضائی حملوں کے باوجود داعش نے عراق کے شمال اور شمالی مغربی علاقوں پر اپنا قبضہ برقرار رکھا ہوا ہے اور عراقی فورسز ایران اور امریکا کی مدد سے صرف شمالی شہر تکریت سے داعش کے جنگجوؤں کو نکال باہر کرنے میں کامیاب ہوئی ہیں۔

کینیڈا کی شام میں فضائی کارروائیوں کی تیاریاں مکمل

06Apr15_UTتیاریUT_BU

اوٹاوا: حکومت نے عراق کے بعد اب شام میں فضائی کارروائیوں کی تیاریاں مکمل کر لی ہیں۔ حالیہ دنوں ایک میڈیا کے نمائندگان کے ہاتھ لگنے والی ایک خفیہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ حکومت نے عراق کے بعد شام میں فضائی کارروائی کرنے کی تیاریاں مکمل کر لیں ہیں۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اس مشن میں وہ امریکہ کی بھرپور معاونت کرے گا۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کامبیٹ مشن کی بھی تیاریاں جاری ہیں تاہم فنڈز کی کمی کے باعث کامبیٹ مشن مکمل نہیں ہو سکا ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ حکومت کی خواہش ہے کہ کامبیٹ مشن کو مزید 6 ماہ کی توسیع دی جائے۔ حکومت نے دہشت گرد تنظیم آئی ایس آئی ایس کے خلاف شام میں بھی کارروائی کرنے کے لئے ایوان میں بل پیش کیا تھا جس کے بعد ایوان میں نمائندگان کی جانب سے ملا جلا رجحان سامنے آرہا ہے۔ متعدد امیدواروں نے مشن کی شدید مخالفت کی ہے اور اس مشن کو اپنے اوپر ایک اور جنگ مسلط کرنے سے تشبیہ دی ہے۔ حکومتی ارکان مخالف جماعتوں کی جانب سے کامبیٹ مشن کی شدید مخالفت سے شدید پریشان ہیں تاہم حکومت کی خواہش ہے کہ ایوان جلد از جلد مشن کی منظوری دے۔ ذرائع کے مطابق مشن کی منظوری کے بعد وزیر اعظم اسٹیفن ہارپر باقاعدہ طور پر اعلان کریں گے اور اس مشن کے لئے خصوصی جیٹ طیارے شام بھیجے جائیں گے۔ جیٹ طیاروں کی بمباری کے نتائج آنے کے بعد مشن کے دوسرے مرحلے میں اسپیشل فوجی یونٹ بھی زمینی کارروائی کے لئے بھیجا جائے گا۔ واضح رہے شام میں داعش کے خلاف کارروائی کرنے والا کینیڈا امریکہ کے بعد دوسرا ملک ہو گا۔