اسرائیل سے جنگ اور شام میں لڑائی برابر ہیں: نصر اللہ

October 19, 2015
19Oct15_AA نصراللہ01al-Arabia

لبنان کی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے جنرل سیکرٹری حسن نصر اللہ کا کہنا ہے کہ اسرائیل سے معرکہ آرائی اور شام میں جنگ یکساں طور پر اہم ہیں۔ صہیونی اور تکفیری دونوں منصوبوں کا مقصد ہمارے عوام اور معاشروں کی تباہی ہے تاکہ وہ ذلت کی ایسی اتاہ گہرائیوں میں جا گریں جہاں ان میں قوت ارادی بالکل ختم ہو جائے۔گذشتہ ہفتہ شام میں داد شجاعت دیتے ہوئے مارے جانے والے حزب اللہ کے سرکردہ رہنما کے یاد میں منعقدہ ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نصر اللہ نے کہا کہ حزب اللہ کے جنگجو شام میں ‘تکفیری’ منصوبے کی بیخ کنی کے لئے ایک فیصلہ کن جنگ لڑ رہے ہیں۔ اس مقصد کے لئے ہماری جنگجو میدان جنگ میں اترنے کے لئے پہلے سے زیادہ تیار اور آمادہ ہیں۔اپنے ریکارڈ شدہ ویڈیو خطاب میں حسن نصر اللہ کا کہنا تھا کہ مزاحمت کار جنگجو آج میدان جنگ میں حاضر ہیں۔ اس لئے ضروری ہے کہ وہ پہلے سے زیادہ تیار ہوں کیونکہ ہمیں ایک فیصلہ کن جنگ کا مرحلہ درپیش ہے۔سوموار کے روز حزب اللہ نے بیروت کے جنوب میں اللویزہ میونسپلٹی میں اپنے سرکرہ کمانڈر حسن محمد الحاج کی آخری رسومات میں شرکت کی تھی۔ حسن محمد الحاج شام میں بشار الاسد کی فوج کے شانہ بشانہ لڑتے ہوئے ہلاک ہوئے تھے۔حسن نصر اللہ نے اپنے خطاب میں حسن محمد الحاج کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ رواں مہینے کی دس تاریخ کو حماہ گورنری میں ہونے والی لڑائی میں مارے گئے۔شام میں سرکاری فوج کے ہمراہ لڑنے والی ایرانی حمایت یافتہ لبنانی حزب اللہ غیر شامی تنظیموں میں سب سے بڑی مسلح تنظیم ہے کہ جو بشار الاسد فوج کے شانہ بشانہ لڑ رہی ہے۔ حزب اللہ کی مدد سے ہی شام کی سرکاری فوج کو مختلف علاقوں میں جنگی برتری حاصل ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s