حوثیوں نے جنگ بندی کا کوئی وعدہ نہیں کیا: العسیری

October 09, 2015
09Oct15_AA حوثی01al-Arabia

سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کے ترجمان بریگیڈئیر جنرل احمد العسیری نے کہا ہے کہ حوثیوں کے خلاف یمن میں فوجی کارروائیاں جاری رہیں گی اور ان سے باغیوں نے جنگ بندی سمجھوتے سے متعلق ابھی تک کوئی وعدہ نہیں کیا ہے۔وہ العربیہ ڈاٹ نیٹ عربی سے گفتگو کررہے تھے۔انھوں نے کہا کہ اتحادی فورسز حوثی باغیوں اور سابق صدر علی عبداللہ صالح کی وفادار فورسز کے خلاف اس وقت فوجی کارروائیاں جاری رکھیں گی جس تک اقوام متحدہ کی قرارداد نمبر 2216 کے مطابق حوثی باغی اپنے زیر قبضہ علاقوں سے پسپا نہیں ہوجاتے اور قانونی حکومت کی پورے ملک میں عمل داری قائم نہیں ہوجاتی ہے۔سلامتی کونسل نے اپریل میں اقوام متحدہ کے چارٹر کے باب سات کے تحت یہ قرارداد منظور کی تھی۔اس کے تحت حوثی تحریک کے لیڈر اور سابق صدر علی عبداللہ صالح کے خلاف پابندیاں عاید کردی گئی تھیں۔اس میں حوثی ملیشیا سے مطالبہ کیا گیا تھا کہ وہ اپنے زیر قبضہ علاقوں کو خالی کردے،غیرمشروط طور پر تشدد کا خاتمہ کرے اور مزید یک طرفہ اقدامات سے گریز کرے۔بریگیڈئیر جنرل احمد العسیری نے بتایا کہ جمعہ تک حوثی ملیشیا کی جانب سے اتحادی فورسز کے علاوہ یمن کے بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ صدر عبد ربہ منصور ہادی کی حکومت کو بھی جنگ بندی سے متعلق کوئی وعدہ موصول نہیں ہوا ہے۔انھوں نے العربیہ کو بتایا کہ ”اگر ایسا ہوتا ہے تو یمنی حکومت اور اقوام متحدہ کی جانب سے اس کا باضابطہ اعلان کیا جائے گا”۔بعض میڈیا ذرائع نے حالیہ دنوں میں یہ اطلاع دی ہے کہ حوثیوں اور صالح ملیشیا نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بین کی مون سے یہ کہا ہے کہ وہ گذشتہ چھے ماہ سے جاری جنگ کے خاتمے اور مذاکرات کے لیے تیار ہیں۔
Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s