فوجیوں کی ہلاکت کے بعد اماراتی طیاروں کی یمن پر بمباری

September 06, 2015
06Sep15_BBC بمباری01
BBC

حوثی باغیوں کے خلاف کارروائیوں میں حصہ لینے والے اپنے 45 فوجیوں کی ہلاکت کے بعد متحدہ عرب امارات کے جنگی طیاروں نے یمن میں کئی مقامات پر شدید بمباری کی ہے۔
ہ فوجی جمعے کو یمن کے دارالحکومت صنعا سے 250 کلومیٹر دور مشرق میں ماریب کے علاقے میں گولہ بارود کے ایک ذخیرے پر باغیوں کے راکٹ حملے کے نتیجے میں مارے گئے تھے۔یہ متحدہ عرب امارات کی عسکری تاریخ کا سب سے بڑا جانی نقصان ہے۔سنیچر کو سعودی عرب نے کہا ہے کہ اس حملے میں اس کے بھی دس فوجی ہلاک ہوئے ہیں جب کہ خیال ہے کہ پانچ بحرینی فوجی بھی اس دھماکے کا نشانہ بنے۔حوثی باغیوں کا کہنا ہے کہ ان کا یہ حملہ سعودی قیادت میں قائم عسکری اتحاد کے ’جرائم‘ کا بدلہ ہے۔
05Sep15_BBC امارتی اموات01
متحدہ عرب امارات کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق سنیچر کو ہونے والی بمباری میں حوثی باغیوں کے متعدد ٹھکانے نشانہ بنے ہیں۔ایک اطلاع کے مطابق دارالحکومت صنعا پر ہونے والی بمباری میں 20 سے زیادہ شہری مارے گئے ہیں۔.اقوام متحدہ کے مطابق یمن میں مارچ سے سعودی کمان میں ہونے والی فوجی کارروائیوں میں ساڑھے چار ہزار افراد ہلاک ہو چکے ہیں جن میں سے دو ہزار سے زیادہ عام شہری ہیں۔یمن میں حوثی باغیوں کے دارالحکومت صنعا پر قبضے کے بعد صدر منصور ہادی فرار ہو کر ساحلی شہر عدن منتقل ہو گئے تھے تاہم بعد میں حوثی باغیوں نے جب عدن کی جانب پیش قدمی شروع کی تو صدر وہاں سے فرار ہو سعودی عرب پہنچ گئے تھے۔حوثی باغیوں کی پیش قدمی پر سعودی عرب نے متعدد بار خبردار کیا تھا تاہم بعد میں اس نے یمن میں باغیوں کے خلاف فوجی کارروائیوں کا آغاز کر دیا اور کئی علاقوں کا کنٹرول دوبارہ واپس لے لیا ہے۔
Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s